Faiz Ahmad Faiz Ghazal in Urdu || Faiz Ahmad Faiz Poetry

Faiz Ahmad Faiz Ghazal in Urdu || Faiz Ahmad Faiz Poetry

Sialkot ka aik makaan tha Faiz sahib jit thay samnay aik larki rehti thi aur Faiz sahib shayad is ke ishhq mein mubtala thay lekin aik din college se jab wapas gaye to woh larki wahan nahi thi

agha nasir ne apni kitaab mein likha hai ke bohat saal baad jab Faiz , Faiz Ahmed Faiz ban gaye to wapas aaye to woh larki aayi hui thi aur –apne shohar ko Faiz sahib se mlwane layi. kehte hain uska shohar nihayat khobsorat aadmi tha to Faiz sahib kehte hain ke mein un se mila aur woh larki mujh se kehti hai ؛
” mera shohar kitna khobsorat hai “

Faiz Ahmad Faiz Poetry in Urdu

سیالکوٹ میں ایک گھر تھا، فیض صاحب جٹ تھے، ان کے سامنےکےگھر ایک لڑکی رہتی تھی اور شاید فیض صاحب ان سے محبت کرتے تھے۔

آغا ناصر نے اپنی کتاب میں لکھا ہے کہ کئی سالوں کے بعد جب فیض فیض احمد فیض بنے تو وہ واپس آئے اور وہ لڑکی اپنے شوہر کو فیض صاحب سے ملانے آئی تھی۔ کہتے ہیں ان کا شوہر بہت خوبصورت آدمی تھا، تو فیض صاحب کہتے ہیں کہ میں ان سے ملا  اور وہ لڑکی مجھے بتاتی ہے۔

“میرا شوہر بہت خوبصورت ہے”

Faiz Ahmad Faiz Ghazal in Urdu || Faiz Ahmad Faiz Poetry
Read More : 

Leave a Comment